FAQ's

صحاح ستہ اور کتب تسعہ سے کیا مراد ہے ۔  ؟
صحاح ستہ سے مراد  احادیث شریف کی 6 سب سے مستند کتابیں ہیں ۔

1۔  صحیح بخاری شریف۔
2۔ صحیح مسلم شریف۔
3۔ سنن ابوداؤد۔
4۔ سنن نسائی ۔
5۔ جامع ترمذی شریف۔
6۔ سنن ابن ماجہ۔

کتب تسعہ احادیث کی 9 سب سے مستند کتابیں ہیں ۔ انمیں سے 6 تو صحاح ستہ والی ہیں اسکے علاوہ درج  ذیل تین  کتابیں ہیں۔

7۔ موطا امام مالک۔
8۔ سنن دارمی شریف۔
9۔ مسند احمد شریف ۔


اکثر تراجم و آیات کے ساتھ نمبر لکھا ہوتا ہے جیسے (042:019) اس آیت کو آسانی سے کیسے دیکھا جاسکتا ہے-؟

یہ نمبر سورہ اور آیت نمبر کو ظاہر کرتا ہے۔ 042 سورت نمبر ہے اور 019 آیت نمبر ہے۔

ایزی قرآن و حدیث کے مین پیج پر دائیں ہاتھ پر نیچے کونے میں (Navigation) کا  ٹیب بنا ہوا ہے۔ اس پر پہلی تین لائن میں سورہ، رکوع اور آیت نمبر لکھا ہوا ہے۔ سورہ کی لائن میں کلک کرنے سے تمام سورتوں کے نام اور نمبر لکھے ہوئے آجائیں گے۔ مطلوبہ نمبر سلیکٹ کریں۔ اسکے بعد آیت نمبر کی لائن میں کلک کریں اور آیت نمبر ٹائپ کرکے Enter کریں۔ مطلوبہ سورت اور آیت نمبر سامنے آجائیں گے۔


قرآن مجید  میں  ہر دفعہ سرچ  (تلاش)  کرنے میں صرف 10  رزلٹ سامنے آتے ہیں ایسا کیوں ہے۔  ( V5.1 ) ؟

تلاش کو تیز کرنے کے لیے پہلے  10 رزلٹ  دکھائے جاتے ہیں ۔ اگلے 10 رزلٹ یا تمام رزلٹ دیکھنے کے لیے تلاش کی ونڈو میں نیچے کی طرف  دو بٹن بنے ہوئے ہیں۔ ایک اگلے 10 رزلٹ کے لیے اور دوسرا تمام رزلٹ دکھانے کے لیے ۔


تراجم اور تفاسیر کے نام کے سامنے mc  یا ma یا mr  لکھا ہوا ہے۔ اسکا کیا مطلب ہے۔   ( V5.1 ) ؟

تراجم اور تفاسیر کثیر تعداد میں شامل ہیں جنمیں مجمل (مختصر)  اور مفصل  (تفصیل) دونوں شامل ہیں۔

تمام تراجم اور وہ تفاسیر جنکے الفاظ کی تعداد 15 لاکھ سے کم ہے انکے سامنے mc لکھا ہوا ہے۔ جو مخفف ہے Mode Classic  کا۔

تمام تفاسیر جنکے الفاظ کی تعداد 15 لاکھ سے زیادہ ہے انکے سامنے  ma  لکھا ہوا ہے جو مخفف ہے Mode Advance  کا ۔

وہ تفاسیر جو English  میں ہیں یا  تراجم و تفاسیر (اہل تشیع) ہیں انکے  سامنے mr  لکھا ہوا ہی جو مخفف ہے Mode Research  کا۔

قرآن مجید میں اوپر ریکارڈ نمبر کے ساتھ انہیں  Mode  سلیکٹ کرنے کا بٹن ہے ۔ ایک دفعہ سلیکٹ کر کے پروگرام بند کر کے دوبارہ چلانے سے ایکٹیویٹ ہوتا ہے ۔


اہل تشیع کے تراجم و تفاسیر کیوں شامل کیے ہیں ۔   ( V5.1 ) ؟

حرمین شریفین میں عام مشاہدہ ہے کہ اہل سنت اور اہل تشیع شانہ بشانہ طواف کرتے نظر آتے ہیں اور ریاض الجنتہ  میں نوافل ادا کرتے نظر آتے ہیں ۔ بعینہ یہی صورتحال حج کی ہے۔  مہتمم جامعہ اشرفیہ مولانا عبیداللہ صاحب نے فرمایا   کسی ذی ہوش شخص کی باتوں میں تعارض  (اختلاف) نہیں ہوتا  کجا کہ نبی کی باتوں میں تعارض ہو ۔  جہاں ایسا محسوس ہو درمیان کی کڑی کھنگالو۔

کوئی مسلک اہل سنت یا اہل تشیع کے درمیان یہ نہیں کہتا کہ کوئی بات ہم نے خود بنائی  ہوئی ہے ۔  سب کا یہ کہنا ہے کہ ہم اللہ اور نبی کی باتوں کی پیروی کررہے ہیں ۔ اس لحاظ سے ہم سب ایک ہیں  ۔مسلمان  ۔ جہاں اختلاف نظر آے درمیان کی کڑیاں کھنگال لو بات واضع ہو جائے گی۔

دوسرے بزرگوں سے سنا ہے کہ آخرت میں حساب اپنا اپنا ہوگا۔ کسی دوسرے کا وبال کسی دوسرے پر نہیں ہوگا چاہے وہ کتنا قریبی ہو چاہے باپ ہو بیٹا ہو یا بیوی۔ جیسا کہ حضرت ابراہیم اور انکے والد، حضرت نوح اور انکے بیٹے، فرعون اور انکی بیوی کا ذکر قرآن مجید میں موجود ہے ۔ تو ضروری ہے کہ اپنی اصلاح ہو ۔ اپنا راستہ سیدھا ہو۔ اسی کی تحقیق و کوشش رہے ۔ اللہ تعالی کا احسان عظیم ہے کہ اس نے مسلمان گھر میں پیدا کیا۔ ورنہ جو لوگ کسی اور مذہب سے مسلمان ہوئے ہیں انکی تعداد آدھے فیصد سے بھی کم ہے۔  اب ضروری ہے کہ اللہ تعالی کے ہاں حاضری ایسی ہو کہ اعمال نامہ دائیں ہاتھ میں ملے  اسی کی تحقیق و کوشش رہے۔

اس سوفٹ وئیر میں مختلف موڈ  دئیے  گے ہیں۔ موڈ ‏Mode Classic (mc)  اور Mode Advance (ma)  سلیکٹ کر کے آپ تمام  اہل سنت کے تراجم و تفاسیر دیکھ سکتے ہیں  لیکن اہل تشیع  کے تراجم و تفاسیر نظر نہیں آئیں گے۔  تاہم جو لوگ ریسرچ کرنا چاہیں جیسے لوگ تقابل ادیان یا تقابل مسلک میں دلچسپی رکھتے ہیں وہ  Mode Research (mr)  سلیکٹ کرکے تراجم و تفاسیر اہل تشیع دیکھ سکتے ہیں ۔  دونوں اہل سنت و اہل تشیع کے تراجم و تفاسیر بالکل الگ الگ  ہیں  اور تراجم و تفاسیر اہل تشیع واضع طور ہر نام کے ساتھ لکھا ہوا ہے کہ کوئی مشکل نہ ہو ۔ اللہ تعالی ہم سب کو دین کی صحیح سمجھ عطا فرمائے اور سیدھے راستہ پر چلنے کی توفیق عطا فرمائے۔ آمین۔


ایزی قرآن و حدیث میں  ہر آیت کا ترجمہ و تفسیر موجود ہے۔ کیا کہیں سورتوں کا خلاصہ بھی ہے۔ ؟

ہر سورت   بسم اللہ سے  شروع  ہورہی ہےجو  ہر سورت کی آیت نمبر 0   شمار کی گئی ہے ۔ اسکی تفسیر دیکھیے۔ بعض علماء نے اسمیں خلاصہ سورت بیان کیا ہے۔


عربی میں  بنیادی الفاظ (Root Words) کی بڑی اہمیت ہے۔ کیا ایزی قرآن و حدیث  میں اسکو تلاش کیا جاسکتا ہے۔؟

ایزی قرآن و حدیث   میں قرآن شریف کے مین پیج میں دائیں ہاتھ  اوپر کونے میں  تلاش  کے بٹن کو کلک کریں۔ تلاش کا مینو سامنے آجائے گا۔  مینو کے دائیں ہاتھ اوپر کے کونے میں  پہلے بٹن کو کلک کریں تو تمام ڈیٹابیس کی فائل کے نام آجائیں گے ۔ تمام  تفاسیر کو سلیکٹ کریں۔   دوسری لائن میں سے  عربی کی بورڈ کو سلیکٹ کریں۔  کی بورڈ سے  مطلوبہ لفظ ٹائپ کریں جیسے ع ل م  ۔  بنیادی الفاظ تین حروف پر مشتمل ہوتے ہیں ۔ تینوں میں سپیس دینی ضروری ہے ۔ یعنی ع  سپیس  ل سپیس م

اسکے بعد تلاش  search  کے بٹن پر کلک کریں ۔ مطلوبہ ریکارڈ سامنے آجائیں گے۔ ایک ایک کر کے تمام ریکارڈ دیکھ لیں۔  ریکارڈ کسی بھی تفسیر میں ہوسکتا ہے خاص طور پر گرائمر کے فولڈر میں ۔   مطلوبہ معلومات ہائی لائٹ ہو جاتی ہے لیکن یہ ہائی  لائٹ اگلے ریکارڈ سے ہوتی ہے۔  پہلے دائیں طرف  مینو میں  دائیں ایرو پر کلک کر کے دوسرے ریکارڈ پر آجائیں۔   اور مطلوبہ معلومات دیکھ لیں ۔ بائیں ایرو پر کلک کر کے پھر پہلے ریکارڈ پر آجائیں تو یہ ریکارڈ بھی ہائی  لائٹ ہو چکا ہو گا۔  ایک دو دفعہ کے بعد کافی آسانی اور روانی سے مطلوبہ معلومات تلاش ہو جائے  گی۔


قرآن شریف کی آیات میں اعراب لگے ہوئے  ہیں ۔  کسی آیت کو تلاش کرنے کا آسان طریقہ کیا ہے ۔  ؟

ایزی قرآن و حدیث میں قرآن شریف کی آیات  کو بمعہ اعراب اور بغیر اعراب دونوں طرح تلاش کیا جاسکتا ہے۔  فرض کریں  آپ رَبَّنَا  تلاش کرنا چاہتے ہیں۔ تلاش کے مینو میں جا کر عربی کی بورڈ پر کلک کریں اور   ربنا       بغیر اعراب کے ٹائپ کریں۔ کی بورڈ بند کرکے  دائیں والے بٹن سے آیت بغیر اعراب سلیکٹ کریں اور تلاش کا بٹن دبائیں ۔  قرآن شریف میں جہاں جہاں ربنا کا لفظ ہے وہ  آیات /ریکارڈ سامنے آجائیں گے۔  ایک ایک کر کے دیکھ لیں۔ تلاش کردہ لفظ ہائی لائٹ نہیں ہو گا کیونکہ آیت بغیر اعراب ڈسپلے نہیں کی گئی ہے۔ البتہ اگر آپ چاہیں تو نئی  لےآوٹ میں آیت بغیر اعراب ڈسپلے کر سکتے ہیں اس سورت میں یہ ہائی لائٹ  ہو جائے گا۔

بمعہ اعراب تلاش کرنے کے لیے یا تو پہلے سے موجود  آیت میں سے  رَبَّنَا  سلیکٹ کر کے تلاش میں پیسٹ کردیں اور دائیں والے مینو میں آیت بمع اعراب سلیکٹ کرکے  تلاش کا بٹن دبائیں  تو مطلوبہ ریکارڈ سامنے آجائیں گے۔  یا اگر پہلے سے آیت سامنے نہیں تو عربی کی بورڈ سے بمعہ اعراب ٹائپ کریں۔ زیادہ  آسانی اسی میں ہے کہ بغیر اعراب ٹائپ کرکے ‘‘آیت بغیر اعراب’’ سلیکٹ کر کے تلاش کرلیں۔


کیا  ایزی قرآن و حدیث   میں تلاش کرنے کے لیے لفظ کا پورا لکھنا ضروری ہے یا کچھ حصہ لکھ کر بھی تلاش کیا جاسکتا ہے-؟

ایزی قرآن و حدیث کی تلاش ہو بہو وہی  تلاش کرتی ہے جو آپ نے لکھا ہے ۔ لفظ کا پورا ہونا ضروری نہیں ہے ۔  مثلا  قرآن شریف میں کئی جگہ مسلمانوں کو خطاب کرنے کے لیے ” اے ایمان والو  ’’  کا لفظ آیا ہے اور آپ تلاش کرنا چاہتے ہیں کہ یہ کہاں کہاں آیا ہے ۔

تلاش مینو میں جا کر اردو کی بورڈ سلیکٹ کر کے آپ پورا لفظ بھی لکھ سکتے ہیں اور صرف   اے  ایم  لکھ کر تلاش کا بٹن دبائیں تو جہاں جہاں اے ایم کا لفظ آئے گا وہ ریکارڈ سامنے آجائیں گے ۔

اسی طرح اگر آپ تمام تراجم میں سود کا لفظ لکھ کر تلاش کریں گے تو  سود کے ساتھ وہ الفاظ جس میں سود کے لفظ شامل ہو تے ہیں  جیسے  اسود ،  سودہ،  آسودہ،  بےسود  وغیرہ الفاظ بھی شامل ہوجائیں گے۔  اسکے لیے آپ سود سے پہلے اور بعد میں سپیس شامل کر لیں یعنی سپیس سود سپیس  لکھ کر تلاش کریں۔ اس صورت میں اب صرف  سود  سے متعلقہ  وہ آیات سامنے آئیں گی جسکے تراجم لفظ سود شامل ہے۔  یہی طریقہ احادیث میں تلاش کا ہے ۔


حدیث موجود ہے لیکن تلاش (Search) سے نظر نہیں آتی ۔

تلاش میں چند چیزوں کا خیال رکھنا ضروری ہے ۔

1۔ مطلوبہ حدیث کو کیا آپ اردو متن میں تلاش کر رہے ہیں یا عربی متن میں۔  تلاش میں کی بورڈ اسی لحاظ سے استعمال کریں۔  مثلا “خیانت ” اگر اردو کی بورڈ سے ٹائپ کرکے اردو احادیث اور صحاح ستہ میں  تلاش کریں تو تقریبا 97 ریکارڈ  سامنے آئیں گے۔ تاہم اگر اسے عربی کی بورڈ سے ٹائپ کرکے تلاش کریں تو کوئی ریکارڈ نہیں ملے گا۔ اسکی وجہ یہ ہے کہ کمپیوٹر کے لحاظ سے عربی کا “ی” اور اردو کا “ی” دو مخلف الفاظ ہیں۔ یہی صورت کافی دوسرے الفاظ کے ساتھ ہے۔  یہی خیال قرآن شریف میں اردو تراجم و تفسیر یا آیت بغیر اعراب کی تلاش میں رکھنا ہے۔ (اردو میں تلاش کے لیے اردو کی بورڈ ۔ عربی حدیث بغیر اعراب و آیت بغیر اعراب کی تلاش کے لیے عربی کی بورڈ)

2۔ قرآن شریف میں تلاش میں ڈیٹا سلیکٹ کرنے کے لیے (یعنی جس ڈیٹا میں تلاش کرنا ہے – تلاش ٹیب میں دائیں ہاتھ والا کولم) تمام تراجم  یا  تمام تراجم/ تفاسیر  سلیکٹ کر کے تقریبا ساری معلومات حاصل کرسکتے ہیں ۔ اسکے دوسرے ڈیٹا کو صرف اسوقت استعمال کریں جب خاطر خواہ مہارت ہو جائے۔ اسی طرح  آیت کی تلاش کے لیے آیت بغیر اعراب سلیکٹ کریں ۔ آیت بمع اعراب اسوقت سلیکٹ کریں جب آپ کے پاس لفظ سامنے ہو اور آپ کاپی پیسٹ کر سکیں۔ جیسے آیت میں حضرت موسی( مُوْسٰٓى) کا ذکر ہو اور آپ چاہیں کہ قران شریف میں کہاں کہاں یہ لفظ آیا ہے تو اسے سلیکٹ کر کے Ctrl C کریں اور تلاش کے  ٹیکسٹ والی لائن میں Ctrl V کر کے پیسٹ کریں۔ دائیں ہاتھ والی لائن میں  آیت بمعہ اعراب سلیکٹ کریں اور تلاش کریں  تو تقریبا  19 ریکارڈ سامنے آجائیں گے۔


حدیث کی تلاش میں بہت زیادہ ریکارڈ آجاتے ہیں۔ کیسے تلاش کروں مثلا  ایک حدیث جس میں نماز ، روزہ اور حج کا ذکر ہو۔

اگر آپ حدیث کی تلاش صحاح ستہ میں نماز لکھ کر کریں گے تو  پانچ ہزار چھ سو  سے زیادہ ریکارڈ سامنے آتے ہیں جس سے مطلوبہ حدیث تلاش کرنا نہایت مشکل ہے ۔

مطلوبہ ریکارڈ کو مزید کم کرنے کے لیے تلاش کی مینو میں بائیں طرف + کا بٹن دبائیں جس سے ایک لائن کا اضافہ ہو جائے گا۔ اس لائن میں  روزہ لکھ کر پھر تلاش کا بٹن دبائیں۔ اب پروگرام ایسی حدیث تلاش کرے گا جس میں نماز اور روزہ دونوں الفاظ موجود ہوں۔ اس دفعہ ریکارڈ کی تعداد تقریبا  141رہ جائے گی۔  اس سرچ کو مزید کم کرنے کے لیے پھر + کا بٹن دبائیں۔ ایک لائن کا اور اضافہ ہو جائگا۔ اس میں حج لکھ کر پھر تلاش کا بٹن دبائیں تو اب پروگرام ایسی حدیث تلاش کرے گا جس میں نماز ، روزہ اور حج تینوں الفاظ موجود ہوں۔ اب ریکارڈ کی تعداد 21 رہ جائے گی جسے آسانی سے دیکھا جاسکتا ہے۔ اسکو دیکھنے سے اندازہ ہوا کہ ایسے الفاظ بھی شامل ہیں جیسے حجاج، حجادہ ، حجر، حجاب وغیرہ۔ یہ اسلیے کہ ان سب میں لفظ حج آرہا ہے۔ ان الفاظ کو ختم کرنے کے لیے لفظ حج سے پہلے اور آخر میں سپیس ڈال دیں ۔  سپیس حج سپیس ۔  (لفظ سپیس نہیں لکھنا صرف ایک سپیس ڈالنی ہے ) اب دوبارہ تلاش کا بٹن دبائیں۔ اب کی مرتبہ ریکارڈ کی تعداد 6 رہ جائے گی ۔ اب آپ آسانی سے اپنی مطلوبہ حدیث دیکھ سکتے ہیں۔  یہی طریقہ قرآن شریف کی سرچ میں بھی استعمال ہوگا۔


حدیث کی تلاش میں بہت کم ریکارڈ آتے ہیں ۔ مثلا  “رفع یدین”  کی تلاش میں  12 ریکارڈ نظر آتے ہیں لیکن مجھے معلوم ہیں کہ کافی زیادہ احادیث اس بارے میں ہیں ۔  کیا آپ نے کم احادیث شامل کی ہیں ۔ ؟

تمام تراجم و تفاسیر اور احادیث کی کتب جیسی ہیں ویسی ہی شامل کی گئی ہیں اور انمیں کسی قسم کی کوئ کمی پیشی نہیں ہے ۔

مختلف مترجم مختلف الفاظ استعمال کرتے ہیں جیسے کچھ اگر رفع یدین لکھتے ہیں تو کچھ ہاتھ اٹھانا یا اس قسم کے مترادف الفاظ استعمال کرتے ہیں ۔ آپ احادیث  مبارکہ میں موضوعات پر کلک کریں۔   موضوعات کے نیچے سرچ  کی چھوٹی  سی ونڈو کھل جائیگی۔ اس میں رفع یدین لکھ کر سرچ کا  آیکون  کلک کریں ۔  رفع یدین سے متعلق تمام موضوعات  سامنے آجائینگے۔ مطلوبہ  موضوع ۔۔نماز میں رفع یدین کا طریقہ اور وقت کا بیان  پر کلک کریں ۔ 139 احادیث  سامنے آجائینگی۔


شرک کے بارے میں قرآن مجید میں کیا ہے آسانی سے کیسے دیکھا جاسکتا ہے۔ ؟

قرآن مجید میں موضوعات پر کلک کریں ۔    موضوعات کے نیچے سرچ  کی چھوٹی  سی ونڈو کھل جائیگی۔ اس میں شرک لکھ کر سرچ کا  آیکون  کلک کریں ۔   شرک سے متعلق تمام موضوعات سامنے آجائینگے ۔ منتخب موضوع سلیکٹ کر کے OK  کا بٹن دبائیں ۔ تمام متعلقہ  آیات   سامنے آجائینگی۔


AQFS اور Easy Quran Wa Hadees   کا مسلک کیا ہے ؟

AQFS) Al Quran Facts and Statistics) نے اسلام کی بہتر سمجھ کے لیے Easy Quran Wa Hadees تیار کیا ہے جسمیں ممتاز علماء دین کے تراجم و تفاسیر شامل کیے گئے ہیں ۔ یہ تراجم و تفاسیر دور حاضر کے علماء کے بھی ہیں اور صدیوں پہلے علماء کے بھی ہیں جیسے تفسیر ابن کثیر ، تفسیر عثمانی اور انگلش میں تفسیر جلالین وغیرہ۔ اسطرح قاری ایک ہی وقت میں کئی تراجم و تفاسیر سے استفاذہ کر کے ہر آیت کی سیر حاصل معلومات حاصل کر سکتا ہے۔ احادیث شریف کی کتب ابتدائے زمانہ اسلام میں لکھی گئی ہیں اور اسی طرح انہی الفاظ میں پیش کی گئی ہیں۔ انکا ترجمہ بھی لفظ بہ لفظ اسی طرح پیش کیا گیا ہے۔ ادارہ AQFS نے اپنی طرف سے نہ کوئی لفظ شامل کیا ہے نہ نکالا ہے اور کیونکہ اکثر معلومات رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اور صحابہ کرام کی ہیں لہذا اسکا مسلک بھی یہی ہے۔ اللہ تعالیٰ ہم سب کو دین کی صحیح سمجھ عطا فرمائے۔ آمین۔