Blog

تفسیر مظہری

نام : تفسیر مظہری
مفسر : حضرت قاضی ثناء اللہ پانی پتی (رح)
مترجم تفسیر : حضرت مولانا سید عبدالدائم الجلالی
حضرت قاضی ثناء اللہ صاحب پانی پتی (رح) کی تصانیف میں سب سے نمایاں حیثیت ان کی تفسیر مظہری کو حاصل ہے جسے انہوں نے عربی زبان میں سات بڑی جلدوں میں تحریر کیا اور اپنے مربی و شیخ حضرت میرزا مظہر جان جاناں شہید کے نام پر اس کا نام مظہری رکھا ۔ قاضی صاحب حجة اللہ البالغة کے مصنف حضرت شاہ ولی اللہ دہلوی کے تلامذہ میں سے ہیں ، یہ بھی نہایت عمدہ تفسیر ہے ، خاص کر احکام و مسائل اور مختلف فقہی مذاہب کے متعلق نفیس ابحاث پر مشتمل ہے تفسیر کا انداز محدثانہ ہے۔ یہ تفسیر قدمائے مفسرین کے اقوال اور تاویلات جدیدہ کی جامع ہے۔ اس تفسیر کو منجانب اللہ قبولیت عامہ حاصل ہوئی، عربی میں تو اس سے استفادہ ہوتا ہی رہا، اردو ترجمہ کے بعد اس کا افادہ اور عام ہوگیا۔ اس تفسیر کا اردو ترجمہ مولانا سید عبدالدائم جلالی (رح) نے ندوۃ المصنفین دہلی کے زیر اہتمام فرمایا تھا۔ اس کے علاوہ اس کا اردو ترجمہ کے فرائض ادارہ ضیاء المصنفین، بھیرہ شریف کے تین فضلاء نے انجام دئیے اور مذکور ادارے کے پچاس سے زائد فضلاء نے اس کے مصادر کی تخریج کی۔ ضیاء القرآن پبلی کیشنز نے اسے دس جلدوں شائع کیا ہے۔ تاہم ہمارے سوفٹ وئیر میں جو ترجمہ شامل ہے ۔ وہ اول الذکر ترجمہ ہے یعنی مولانا سید عبدالدائم الجلالی کا کیا ہوا ترجمہ۔ اور اس سوفٹ وئیر میں جو نسخہ شامل کیا گیا ہے وہ دار الاشاعت اردوبازار کراچی کا اپریل 2010 میں طبع شدہ ایڈیشن ہے۔
حضرت مولانا مفتی محمد تقی عثمانی صاحب معارف القرآن کے مقدمے میں رقم طراز ہیں۔
تفسیر مظہری علامہ قاضی ثناء اللہ صاحب پانی پتی کی تصنیف ہے۔ ان کی یہ تفسیر بہت سادہ اور واضح ہے اور اختصار کے ساتھ آیات قرآنی کی تشریح معلوم کرنے کے لیے نہایت مفید، انہوں نے الفاظ کی تشریح کے ساتھ متعلقہ روایات کو بھی کافی تفصیل سے ذکر کیا ہے اور دوسری تفسیروں کے مقابلے میں زیادہ چھان پھٹک کر روایات لینے کی کوشش کی ہے۔
تعارف مصنف :
قاضی ثناء اللہ پانی پتی اپنے عہد کے عظیم فقیہ، محدث، محقق اور مفسر تھے۔ مولانا شاہ عبدالعزیز محدث دہلوی انہیں بیہقی وقت کہا کرتے تھے۔
نام و نسب
قاضی ثناء اللہ پانی پتی شیخ جلال الدین کبیر الاولیاء کی اولاد سے ہیں۔؎
مولد و مسکن :
قاضی محمد ثناء للہ پانی پتی ہندوستان کے مشہور اور مردم خیز شہر پانی پت میں پیدا ہوئے اور یہیں اسی سال سے زیادہ عمر پا کر وات پائی۔
تحصیل علوم
قاضی ثناء اللہ پانی پتی نے سات برس کی عمر میں قرآن پاک حفظ کیا۔ 16 برس کی عمر میں تکمیل علوم کی۔
بیعت و خلافت
قاضی ثناء اللہ پانی پتی نے شاہ محمد عابدستانی کے دست حق پرست پر بیعت کی۔ ان کے وصال کے بعد حضرت میرزا مظہر جان جاناں سے کسب فیض کیا۔
تصنیف و تالیف
قاضی ثناء اللہ پانی پتی علم تفسیر، حدیث، فقہ، کلام اور تصوف میں نہایت فاضل تھے۔ آپ کی تصانیف کی تعداد 45 کے قریب ہے۔ جن میں سے مشہور کے نام درج ذیل ہیں۔
• تفسیر مظہری۔ قرآن کریم کی یہ تفسیر سات ضخیم جلدوں پر مشتمل ہے۔
• مالا بد منہ۔ یہ مشہور عالم کتاب فقہ کے مسائل پر ابتدائی کتاب ہے
• فتاوی مظہری

Posted in: قرآن مجید

Leave a Comment (0) →

Leave a Comment

You must be logged in to post a comment.