Blog

تفسیر تذکیر القرآن

تذکیر القرآن
یہ مولانا وحید الدین خان کی تفسیر ہے ٢ جلدوں میں ہے ، پہلی بار ١٩٨٥ ء میں شائع ہوئی ہے اس تفسیر کا خاص مقصد قرآن کے تذکیری پہلو کو نمایاں کرنا ہے، تذکیر القرآن کی ترتیب میں سب سے زیادہ اسی پہلو کا لحاظ کیا گیا ہے کہ وہ پڑھنے والوں کے لیے نصیحت بن سکے ، قرآن عام انسانی کتابوں کی طرح ابواب کے انداز میں نہیں ہے ؛بلکہ شذرات کا مجموعہ ہے ، اگرچہ قرآن کی سورتوں اور عبارتوں میں ایک گہری ترتیب بھی ہے ، مگر اس کا عام انداز یہ ہے کہ چھوٹے چھوٹے ٹکڑوں میں ایک پورا پیغام ہے ، تدکیر القرآن میں اسی انداز کو اختیار کیا گیا ہے ؛یعنی قرآن کا ایک ٹکڑا یا ایک پیرا گراف لے کر اس میں جو بات کہی گئی ہے اس کو مسلسل مضمون کی صورت میں بیان کیا گیا ہے؛ تاکہ متعلقہ تشریح کو پڑھتے ہوئے قاری کے ذہن میں معانی کا سلسلہ نہ ٹوٹے اور وہ قرآن کی تذکیری غذا مسلسل لیتا جائے، تذکیر القرآن کی ترتیب یہ رکھی گئی ہے کہ پہلے قرآن کا زیر ِ تشریح ٹکڑا درج کیا گیا اس کے نیچے اس کے ترجمہ کے بعد ایک لکیر دے کر متعلقہ ٹکڑے کی تشریح ہے ، تذکیر القرآن میں ترجمہ کا جو انداز اختیار کیا گیا ہے وہ نہ پوری طرح لفظی ہے اور نہ پوری طرح بامحاورہ؛ بلکہ درمیانی صورت اختیار کی گئی ہے اور تفصیلات سے عام طور پر پرہیز کیا گیا ہے، دعوتی نقطۂ نظر سے ایک مفید تفسیر ہے ، البتہ اساتذہ وطلبہ اور اہل تحقیق کے لیے کافی شافی نہیں۔
مصنف کا تعارف :
وحیدالدین خاں یکم جنوری 1925 کو بڈھریا اعظم گڑھ، اتر پر دیش بھارت میں ولادت ہوئی۔ مدرسۃ الاصلاح اعظم گڑھ کے فارغ التحصیل عالم دین، مصنف، مقرر اور مفکر جو اسلامی مرکز نئی دہلی کے چیرمین، ماہ نامہ الرسالہ کے مدیر ہیں۔ اور 1967 سے 1974 تک الجمعیۃ ویکلی (دہلی) کے امدیر رہ چکے ہیں آپ کی تحریریں بلا تفریق مذہب و نسل مطالعہ کی جاتی ہیں۔ خان صاحب، پانچ زبانیں جانتے ہیں، (اردو، ہندی، عربی، فارسی۔ اور انگریزی ) ان زبانوں میں لکھتے اور بیان بھی دیتے ہیں، ٹیوی چینلوں میں آپ کے پروگرام نشر ہوتے ہیں۔ مولانا وحیدالدین خاں، عام طور پر دانشور طبقہ میں امن پسند مانے جاتے ہیں۔ ان کا مشن ہے مسلمان اور دیگر مذاہب کے لوگوں میں ہم آہنگی پیدا کرنا۔ اسلام کے متعلق غیر مسلموں میں جو غلط فہمیاں ہیں انہیں دور کرنا۔ مسلمانوں میں مدعو قوم (غیرمسلموں) کی ایذا وتکلیف پر یک طرفہ طور پر صبر اور اعراض کی تعلیم کو عام کرنا ہے جو ان کی رائے میں دعوت دین کے لیے ضروری ہے۔

Posted in: قرآن مجید

Leave a Comment (0) →

Leave a Comment

You must be logged in to post a comment.