Blog

تفسیر الکتاب

الکتاب کے مؤلف ڈاکٹر محمد عثمان رحمتہ اللہ تعالیٰ علیہ
ڈاکٹر صاحب ٩ جون ١٩١٩ ء کو کلکتہ میں پیدا ہوئے ۔ ان کے والد گرامی مولوی ضیاء الرحمن (رح) تعالیٰ علیہ کلکتہ کی مرکزی مسجد اہلحدیث کے امام تھے۔ اس طرح ڈاکٹر صاحب کی تعلیم و تربیت خالص دینی ماحول میں ہوئی۔ شروع ہی سے ذہین و فطین تھے اور ادب سے گہرا لگاؤ تھا۔ ١٩٣٩ ء میں انٹر میڈیت امتیازی نمبروں میں پاس کیا اور کلکتہ میڈیکل کالج میں داخلہ لینے والے دس مسلمان طلبہ میں سے تھے۔ ١٩٤٦ ء میں ایم بی بی ایس کی ڈگری حاصل کی اور ١٩٤٨ ء میں پاکستان ہجرت کی دو سال کراچی میں پرائیویٹ ہسپتال میں کام کیا اور پہر دو سال فوج میں ملازمت کی جو بوجہ خرابی صحت چھوڑنا پڑی ۔ ١٩٥٤ ء میں خیر پور سندھ میں گورنمنٹ اسسٹنٹ ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز حیدر آباد ریٹائر ہوئے۔
ڈاکٹر صاحب بہت اچھے ماہر امراض چشم تھے لیکن انہوں نے ریٹائر منٹ کے بعد نجی کلینک قائم کرنے کے بجائے اپنی خدمات بلامعاوضہ نابیناؤں کے ایک رفاعی ادارے کو پیش کردیں اور کئی ساتل تک جز وقتی کام کرتے رہے ۔ یوں انہوں نے ایمان و اعمال صالحہ کا حقیقی سرمایہ جمع کرنے میں اپنی عمر گزار دی۔
ڈاکٹر صاحب کو ” الکتاب ” کی تحریک چند عیسائی مشنری اداروں کی اس اسکیم سے ہوئی جس کے تحت وہ عوام الناس اور خصوصاً طلبہ میں بائیبل مفت تقسیم کرتے ہیں ۔ ڈاکٹر صاحب کے ذہن میں یہ بات کھٹک گئی کہ مسلمانوں کو بھی اسی طرح کی اسکیم شروع کرنی چاہیے جس کے ذریعے قرآن پاک کو نوجوان نسل میں عام کیا جائے۔
١٩٨٠ ء میں اپنی ریٹائر منٹ کے بعد ڈاکٹر صاحب نے اس خیال کو عملی جامہ پہنانے کا بیڑا اٹھایا اور چار سال کی محنت شافہ کے بعد انہوں نے ” الکتاب ” کے نام سے قرآنی ترجمہ اور مختصر حواشی تیار کرلی۔ ١٩٨٤ ء میں ” الکتاب ” کا پہلا ایڈیشن شائع ہوا ۔
قرآن فاؤنڈیشن کی بنیاد ڈاکٹر صاحب نے اسی اثنا میں رکھی جسکا مقصد عوام الناس اور بالخصوص طلباء میں قرآن مجید کی تعلیمات کو پھیلانا تھا۔
موجودہ چودہواں ایڈیشن ولایت سنز نے بڑے اہتمام سے شائع کیا ہے ۔ اور اس سے پہلے تیرہواں ایڈیشن قرآن سنز نے شائع کیا تھا۔

Posted in: قرآن مجید

Leave a Comment (0) →

Leave a Comment

You must be logged in to post a comment.