Blog

تفسیر البیان

نام : تفسیر البیان
مصنف : جاوید احمد غامدی
جاوید احمد غامدی پاکستان سے تعلق رکھنے والے مدرسہ فراہی کے معروف عالم دین، شاعر ، مصلح ، فقیہ العصر ، اور قومی دانشور ہیں
جاوید احمد غامدی کی پیدایش 18 اپریل 1951 ء کو ضلع ساہیوال کے ایک گاؤں جیون شاہ کے نواح میں ہوئی۔ آبائی گاؤں ضلع سیالکوٹ کا ایک قصبہ اور آبائی پیشہ زمینداری ہے۔ ابتدائی تعلیم پاک پتن اور اس کے نواحی دیہات میں پائی۔ اسلامیہ ہائی اسکول پاک پتن سے میٹرک اور گورنمنٹ کالج لاہور سے بی اے اور اس کے ساتھ انگریزی ادبیات میں آنرز (حصہ اول) کا امتحان پاس کیا۔ عربی و فارسی کی ابتدائی تعلیم ضلع ساہیوال ہی کے ایک گاؤں نانگ پال میں مولوی نور احمد صاحب سے حاصل کی۔ دینی علوم قدیم طریقے کے مطابق مختلف اساتذہ سے پڑھے۔ قرآن و حدیث کے علوم و معارف میں برسوں مدرسۂ فراہی کے جلیل القدر عالم اور محقق امام امین احسن اصلاحی سے شرف تلمذ حاصل رہا۔ ان کے دادا نور الٰہی کو لوگ گاؤں کا مصلح کہتے تھے۔ اسی لفظ مصلح کی تعریب سے اپنے لیے غامدی کی نسبت اختیار کی اور اب اسی رعایت سے جاوید احمد غامدی کہلاتے ہیں۔ دانش سرا، المورد، ماہنامہ اشراق، ماہنامہ رینی ساں Renaissance کے بانی اور برہان، میزان، البیان، اشراق اور خیال و خامہ کے مصنف ہیں۔
غامدی 1980 ء سے دینی علوم پر علمی اور تحقیقی کام انجام دے رہے ہیں۔ ان کے کام کے وہ اجزا حسب ذیل ہیں جو تصانیف کی صورت اختیار کرچکے ہیں :
• البیان (الفاتحہ۔ البقرہ) قرآن مجید کا ترجمہ اور تفسیر
• البیان (الملک۔ الناس) قرآن مجید کا ترجمہ اور تفسیر
• میزان : دین کی تفہیم و تبیین
• برہان : تنقیدی مضامین کا مجموعہ
• مقامات : دینی، ملی اور قومی موضوعات پر متفرق تحریریں
• خیال و خامہ : مجموعہء کلام
ایزی قرآن و حدیث میں غامدی صاحب کی تفسیر البیان کو شامل کیا گیا ہے۔ تفسیر کے بارے میں غامدی صاحب دیباچہ میں لکھتے ہیں :
“ یہ مختصر حواشی کے ساتھ قرآن مجید کا اردو ترجمہ ہے۔ آن سوئے افلاک کے اس شہ بارۂ ادب کا حسن بیان تو کسی دوسری زبان میں منتقل کرنا کسی طرح ممکن نہیں ہے، میں نے، البتہ اس ترجمہ میں یہ کوشش کی ہے کہ اس کا مدعا نظم کلام کی رعایت سے اردو زبان میں منتقل کردوں۔ تراجم کی تاریخ میں یہ اس لحاظ سے پہلا ترجمہ قرآن ہے۔ مجھے امید ہے کہ اربابِ ذوق اس میں قرآن کے حسن بیان کا جلال و جمال بھی کسی حد تک جلوہ فرما دیکھ سکیں گے ”

Posted in: قرآن مجید

Leave a Comment (0) →

Leave a Comment

You must be logged in to post a comment.